سی آئی اے کی درخواست پر ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزمان 90 روز کے لیے نظر بند

کراچی: سندھ حکومت نے سی آئی اے کی درخواست پر ڈینیل پرل قتل کیس کے ملزمان کو 90 روز کے لیے نظر بند کردیا۔

سندھ حکومت کو ڈی آئی جی سی آئی اے نے ایک خط ارسال کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ڈینئل پرل قتل کیس میں نامزد ملزم اور بری ہونے والوں کی رہائی سے نقص امن کا خدشہ ہے، احمد عمر شیخ، فہد نسیم کی رہائی ملک کے لیے نقصان دہ ہوسکتی ہے اس لیے انہیں نظر بند کردیا جائے۔

محکمہ داخلہ سندھ نے ڈینیل پرل قتل کیس سے متعلق سی آئی اے کی درخواست منظور کرتے ہوئے مقدمے سے بری ہونے والے 4 افراد کو دوبارہ تحویل میں لے کر نظر بند کرنے کا حکم جاری کردیا۔ ملزمان میں احمد عمر شیخ، فہد نسیم، سید سلمان ثاقب اور شیخ محمد عادل شامل ہیں جنہیں 3 ماہ کے لیے نظر بند کیا گیا ہے۔

ضرور پڑھیں  بجٹ کے بعد ڈالر مکمل طور پر بے قابو ہوگیا