fbr

برسوں بعد پہلی مرتبہ ہدف سے اربوں روپے زائد ٹیکس اکٹھا

اسلام آباد : ایف بی آر نے تاریخ رقم کر دی، برسوں بعد پہلی مرتبہ ہدف سے اربوں روپے زائد ٹیکس اکٹھا کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق ایف بی آر نے مالی سال 2020 کیلئے ٹیکس وصولیوں کا ہدف حاصل کر لیا۔ ایف بی آر حکام کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ مالی سال کے اختتام پر کل محصولات کا حجم 4700 ارب سے تجاوز کر گیا۔ ایف بی آر نے گزشتہ سال کے مقابلے میں 700 ارب روپے سے زائد اکٹھے کر لیے۔

گزشتہ سال ایف بی آر نے 3997 ارب روپے اکٹھے کیے تھے، جبکہ 30 جون کو ختم ہونے والے مالی سال تک ایف بی آر 4725 ارب روپے اکٹھے کرنے میں کامیاب رہا۔ یوں ایک سال کے دوران ٹیکس محصولات میں 18 عشاریہ 2 فیصد اضافہ ہوا۔ بتایا گیا ہے کہ ٹیکس محصولات میں ریکارڈ اضافے کے علاوہ ترسیلات زر اور ایکسپورٹس کے حجم میں بھی اضافے کا امکان ہے۔

مالی سال 2020 کے آخری ماہ جون کے دوران ترسیلات زر اور ایکسپورٹس کی مد میں حاصل ہونے والے زرمبادلہ کی تفصیلات آئندہ چند روز میں سامنے آئیں گی۔

وزارت خزانہ کی رپورٹ کے مطابق جولائی تااپریل ترسیلات زر29فیصد اضافے سے 26.7 ارب ڈالر ریکارڈ کیا گیا۔ ملکی برآمدات10.3فیصد اضافے سے 23.1ارب ڈالر تک پہنچ گئیں۔ جبکہ امکان ہے کہ مالی سال 2020 کے دوران ترسیلات زر کا کل حجم 29 ارب ڈالرز جبکہ ایکسپورٹس کا حجم 25 ارب ڈالرز رہے گا۔ یوں پاکستان اپنی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک مالی سال کے دوران 50 ارب ڈالرز سے زائد زرمبادلہ حاصل کرلے گا، اسی باعث پاکستان کا کرنٹ اکاونٹ برسوں بعد پہلی مرتبہ کسی مالی سال کے اختتام پر سر پلس میں ہو گا۔

ضرور پڑھیں  ویڈیو اسکینڈل منظر عاپر آنے کے بعد ن لیگ میں بڑے پیمانے پر بغاوت پھوٹ

دوسری جانب وزارت خزانہ کی رپورٹ کے مطابق بیرونی سرمایہ کاری میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ پورٹ فولیوسرمایہ کاری مثبت رجحان کے ساتھ1.75ارب ڈالرتک پہنچیں، براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 107فیصد اضافے سے 3.92ارب ڈالر جبکہ مجموعی زرمبادلہ ذخائر 23 ارب ڈالرز سے زائد کی سطح پر ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں