rapid news

ماں کو قتل کرکے پکا کر کھانے والے سفاک مجرم کو سخت سزا سنا دی گئی

ممبئی : بھارتی ریاست مہاراشٹر میں ذیلی عدالت نے اپنی ماں کو قتل کرکے پکا کر کھانے والے شخص کو سزائے موت سنادی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ضلع کولہا پور میں 35 سالہ شخص نے اپنی ماں کو قتل کرنے کے بعد لاش کےٹکڑے کیے اور انہیں پکا کر کھا گیا۔ عدالت نے مجرم کو سزائے موت سناتے ہوئے کہا کہ یہ کیس سفاکیت میں اپنی مثال آپ ہے۔

جج مہیش کرشنا جی یادیو نے فیصلے میں لکھا کہ اس جرم نے پورے معاشرے کے شعور کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا، یہ صرف قتل ہی نہیں تھا بلکہ انتہا درجے کی بربریت اور بے شرمی کی انتہا تھی۔

عدالتی فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ مقتولہ جس تکلیف سے گزری ہوگی اس کو الفاظ میں بیان نہیں کیا جاسکتا، مجرم نے اپنی شراب کی لت پوری کرنے کیلئے جرم کیا اور اپنی بے یار و مدد گار ماں کی زندگی کا خاتمہ کردیا جو کہ ممتا کی بدترین توہین ہے۔

خیال رہے کہ 35 سالہ مجرم سنیل راما کچکوروی نے اگست 2017 میں اپنی ماں کو قتل کردیا تھا۔ قریب ہی موجود ایک بچے نے مجرم کو خون میں لت پت دیکھا تو اس نے رونا اور چیخنا چلانا شروع کردیا جس پر لوگ اکٹھے ہوگئے جنہوں نے پولیس کو بلالیا۔

جائے وقوعہ پر پہنچنے والے انسپکٹر کے مطابق جب وہ پہنچا تو اس نے دیکھا کہ خاتون کی لاش خون میں لت پت تھی اور اس کے جسم کے کئی اعضا الگ کیے جاچکے تھے۔ مقتولہ کا دل ایک پلیٹ میں پڑا تھا جب کہ اس کے دیگر اعضا پکنے کیلئے آگ پر رکھے ہوئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں