حاملہ بیوی سے طلاق لینے کیلئے شوہر نے اسے انجیکشن لگا کر ایڈز سے متاثر کردیا

علی گڑھ : بھارتی ریاست اتر پردیش میں سفاک شوہر نے طلاق لینے کیلئے حاملہ بیوی کو انجیکشن لگا کر اسے ایڈز کا مریض بنادیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ضلع علی گڑھ کے علاقے رام گھاٹ سے تعلق رکھنے والی لڑکی کی 7 دسمبر 2020 کو شادی ہوئی تھی۔ دولہا کے خاندان کو دلہن والوں کی طرف سے 12 لاکھ روپے نقد اور 25 لاکھ روپے مالیت کا جہیز دیا گیا۔ شادی کے کچھ عرصہ بعد دلہن کو پتہ چلا کہ اس کے شوہر کا نرسنگ ہوم میں کام کرنے والی ایک خاتون کے ساتھ ناجائز تعلق ہے جس کی بنا پر دونوں میں جھگڑا ہوگیا۔

سسرالیوں نے لڑکی کے گھر والوں کو بلا کر کہا کہ دونوں میں جھگڑا بہت زیادہ ہوتا ہے اس لیے ان کی طلاق کرادی جائے تاہم میکے والوں نے کہا کہ حمل کی وجہ سے طبیعت خراب ہوسکتی ہے۔ اس بات کے کچھ ہی دن بعد شوہر اپنی حاملہ بیوی کو اس کے گاؤں کے باہر چھوڑ کر چلا گیا۔

گھر پہنچنے پر لڑکی نے اپنے اہلخانہ کو بتایا کہ اس کا شوہر اور جیٹھ اسے انجیکشن لگوانے لے جاتے تھے جس کی وجہ سے وہ ایڈز کی مریضہ بن گئی ہے۔ لڑکی کی درخواست پر پولیس نے خاتون کے شوہر، سسرالیوں اور انجیکشن لگانے والے نرسنگ ہوم کے مالک کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

ضرور پڑھیں  ’جھوٹے، اکیلے اکیلے کورونا ویکسین لگوا آئے ہو‘بھارتی ڈاکٹر کی ٹی وی پر دنیا کے سامنے بیگم کے ہاتھوں تاریخی ’عزت افزائی‘

اپنا تبصرہ بھیجیں