مولانا طارق جمیل کے بیٹے کے انتقال سے متعلق اہم انکشاف

لاہور : پولیس نے مولانا طارق جمیل کے بیٹے کے انتقال سے متعلق اہم انکشاف کیا ہے۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ مولانا طارق جمیل کے بیٹے نے خودکشی کی۔ بتایا گیا ہے کہ انہوں نے پستول سے خود کو گولی ماری۔ نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق آر پی او ملتان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مولانا طارق جمیل کے بیٹے عاصم جمیل نفسیاتی مریض تھے اور وہ ایک طویل عرصے سے ادویات کا استعمال کر رہے تھے۔
پولیس حکام نے بتایا کہ عاصم جمیل نے 30 بور کے پستول سے اپنے آپ کو گولی ماری۔ پولیس کا کہنا ہے کہ عاصم جمیل نے اپنے ملازم عمران سے پستول منگوایا،جس کے بعد انہوں نے پستول چھاتی کی جانب کر لیا، عاصم جمیل کو ان کے ملازم عمران نے ایسا کرنے سے منع کیا۔
پولیس کے مطابق عاصم جمیل نے پسند کی شادی کی تھی اوربعد میں طلاق ہوگئی تھی۔ ادھر سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ایکس پر کی گئی اپنی ایک پوسٹ میں مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ آج تلمبہ میں میرے بیٹے عاصم جمیل کا انتقال ہوگیا ہے، اس حادثاتی موت نے ماحول کو سوگوار بنا دیا۔

مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ آپ سب سے گزارش ہےکہ اس غم کے موقع پر ہمیں اپنی دعاؤں میں یاد رکھیں، اللہ میرے فرزند کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں