محمد علی درانی نے قومی حکومت کا نیا فارمولا پیش کر دیا

لاہور : سابق وزیر اطلاعات محمد علی درانی نے قومی حکومت کا نیا فارمولا پیش کر دیا۔انہوں نے اے آر وائی سے منسلک صحافی نعیم اشرف بٹ کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ میرا اگلا فارمولا منتخب ’نیشنل یونٹی گورنمنٹ ‘ ہے جس میں تمام سیاسی جماعتیں ہوں گی۔بہترین قومی حکومت وہی ہے جسے عوام منتخب کرے۔نیشنل حکومت کا پہلا پوائنٹ یہ گا کہ اس میں تمام سیاسی جماعتیں شامل ہوں گی۔
دوسرا ان جماعتوں میں سب سے زیادہ نشستوں والی جماعت وزیراعظم کے لیے 3 نام دے ان میں سے جس کو اسمبلی کرے وہ وزیراعظم بنے۔منتخب نیشنل یونٹی گورنمنٹ کا تیسرا نکتہ یہ ہے کہ کابینہ میں تیس سے زیادہ وزراء نہیں ہونے چاہئیے۔چوتھا نکتہ یہ ہے کہ چھ ماہ میں بلدیاتی انتخابات ہوں جن کی مدت اسمبلیوں کے برابر ہو۔
یہ بھی طے ہو کہ آئندہ قومی و صوبائی انتخابات کے ساتھ بلدیاتی انتخابات بھی ہوں۔

محمد علی درانی نے مزید کہا کہ اس وقت ہماری جمہوریت چند الیکٹیبلز کے گرد گھوم رہی ہے۔ہم نے نظام کو پاکستان، عوام اور ان کے اداروں کے مفاد میں لانا ہے۔انتخابات سے قبل پہلے سیاسی جماعتیں تحریری معاہدے پر دستخط کریں۔اس معاہدے میں اقرار کریں کہ الیکشن کے بعد ہم سب مل کر حکومت بنائیں گے۔نوازشریف آئے تو ستر فیصد لوگوں نے ان کی مفاہمت کی بات کو پسند کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں