Warning: mysqli_query(): (HY000/1194): Table 'wpci_stylo_views' is marked as crashed and should be repaired in /home/dailyrapd/public_html/wp-includes/wp-db.php on line 2056

Warning: mysqli_query(): (HY000/1194): Table 'wpci_stylo_views' is marked as crashed and should be repaired in /home/dailyrapd/public_html/wp-includes/wp-db.php on line 2056

حریم شاہ کے پاس موجود بھاری رقم کا دعویدار سامنے آ گیا

لاہور : پاکستان کی معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ کی بھاری رقم کے ساتھ ویڈیو نے پاکستانی اداروں کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ پاکستان کے متعلہ اداروں نے جیسے ہی اس رقم سے متعلق تحقیقات کا آغاز کیا ، حریم شاہ اپنے بیان سے مُکر گئیں جبکہ حریم شاہ کے پاس موجود اس بھاری رقم کا دعویدار بھی سامنے آ گیا۔ تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر حریم شاہ نے ایک اور ویڈیو جاری کی جس میں انہوں نے کہا کہ میری ویڈیو وائرل ہونے کے بعد مجھ پر منی لانڈرنگ کا الزام عائد کیا گیا لیکن میں نے کبھی منی لانڈرنگ نہیں کی ، نہ ہی مجھے اس بارے میں زیادہ علم ہے۔

حریم شاہ نے رقم کے ساتھ بنائی گئی ویڈیو میں کی جانے والی گفتگو کو مذاق قرار دیا اور کہا کہ میں اپنے بھائی کے آفس میں آئی تھی اور وہاں میں نے کچھ رقم رکھی دیکھی تو ان کی اجازت سے وہ رقم ویڈیو بنانے کے لیے استعمال کی۔

انہوں نے کہا کہ جس رقم کو ویڈیو میں استعمال کیا وہ غیر قانونی نہیں تھی، میں یہی بتانا چاہوں گی کہ جو منی لانڈرنگ کرتے ہیں وہ بتا کر نہیں کرتے جب کہ میں امیگریشن کلیئر کرکے لندن آئی ہوں، جس کو کیمروں کی مدد سے چیک بھی کیا جا سکتا ہے۔

سب کو پتا ہے میں نے کبھی کوئی غلط کام نہیں کیا اور نہ ہی کوئی جرم کیا، میں تو بہت سے ملکوں میں پاکستان کی نمائندگی کرکے اعزاز لے کر آ چکی ہوں۔ اسی ویڈیو میں حریم شاہ کے ساتھ ایک اور شخص کو بھی دیکھا گیا جس نے خود کو منی ایکسچینج کا ملازم ظاہر کیا اور بتایا کہ حریم شاہ کی ویڈیو میں موجود یہ پیسہ اس کا تھا۔ ویڈیو میں موجود شخص نے بتایا کہ میں نے حریم کو کال کی تھی جس پر وہ میرے آفس لنچ کے لیے آئیں تو کلائنٹ کا جو پیسہ مجھے ڈیپازٹ کرنا تھا، وہ رکھا ہوا تھا جس پر حریم نے مجھ سے ان پیسوں کے ساتھ ویڈیو بنانے کی اجازت مانگی تھی۔

انہوں نے کہا کہ میرا پیسہ قانونی ہے، اگر منی لانڈرنگ کرنی ہوتی تو کھلے عام پیسہ ظاہر نہ کرتے، اس پیسے کا ثبوت موجود ہے لہٰذا حکومت کو چاہئیے ان بڑے لوگوں جن میں بزنس ٹائیکون بھی شامل ہیں انہیں پکڑیں جو حقیقت میں منی لانڈرنگ کرتے ہیں۔